چارسدہ کا نوجوان خالد جو کہ پیشے کے لحاظ سے ایک ٹیلر ہے کرونا سے بچاؤ کے لیے ماسک تیار کر کے چارسدہ کی عوام میں مفت تقسیم کر رہا ہے۔ اس وقت پاکستانی قوم اور ملک کو اس وباء سے بچانے کے لئے حفاظتی اقدامات کی اشد ضرورت ہے اور ماسک انتہائی ضروری سمجھا جا رہا ہے۔

شرم کا مقام ہے ان دولت مندوں کے لئے جنہوں نے اپنی تجوریوں کو بڑے بڑے تالے لگائے ہیں۔ اور ڈوب مرنے کا مقام ہے ان پیشہ ور مفاد پرستوں کے لئے جو مواقع کی تاک میں ہوتے ہیں کہ کب کوئی کمائی کا موقع ملے اس وقت جب مارکیٹ میں ناقص ترین ماسک کی قیمتیں آسمان کو چھو رہی ہیں اس نوجوان اور اس کی ٹیم کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں جو معیاری ماسک خود تیار کر کے فری میں تقسیم کر رہا ہے۔ ہمارے سیاسی و سماجی شخصیات، میڈیا کے بھائیوں سے اور حکومتی نمائندوں سے بھی گذارش ہے کہ اس نوجوان کی حوصلہ افزائی کی جائے تاکہ فلاح کے کام کرنے والوں کے حوصلے بلند ہوں اور معاشرے میں نیکی فروغ پاسکے۔ ہماری دعا ہے کہ اللہ خالد بھائی اور اس کی ٹیم کی اس کاوش کو قبول کرے۔ اور ان کی جان ، مال اور عزت میں اضافہ ہو۔
سوشل میڈیا کے بھائیوں سے بھی گذارش ہے کہ اسکو شئیر کریں تاکہ معاشرے میں نیکی پھیل سکے اور لوگوں میں خدمت کا جذبہ بیدار ہو۔
(عمیر خان ترنگزئی)

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here